Breaking News
Home / india / بھارت اور روس کا پانچویں جنریشن کے جنگی جہاز کا معاہدہ خطرے میں

بھارت اور روس کا پانچویں جنریشن کے جنگی جہاز کا معاہدہ خطرے میں

بھارت اور روس کے درمیان پانچویں نسل کے جدید ترین لڑاکا طیاروں کو لےکر ایک معاہدے پر بات چیت چل رہی تھی جس کے تحت روس نے بھارت کو ریڈار پر نظر نہ آنے والے سٹیلتھ لڑاکا جہاز فراہم کرنا تھےاگر یہ معاہدہ طے پا جاتا ہے تواس معاہدہ کی رو سے روس نے اپنے جدید ترین پانچویں نسل کے لڑاکا طیارے ٹیکنالوجی ٹرانسفر کے تحت بھارت کو فراہم کرنا تھے


لیکن اس معاہدہ کے حوالے سے جو تازہ خبریں سامنے آرہی ہیں وہ اس معاہدہ
کیلئے خطرناک ہیںبھارت کے مختلف دفاعی ویب سائٹ میں خبر سامنے آرہی ہے کہ بھارتی فضائیہ اس معاہدہ سے زیادہ خوش نہیں ہے اس لئے وہ حکومت سے اس معاہدہ کو
ختم کرنے کیلئے درخواست کر رہی ہےاس کی وجوہات اس طیارے کی قیمت میں اضافہ ،اس کا آزمائشی پروازوں میں زیادہ بہتر کارگردگی نہ دیکھانا اور بھارت کا مغربی ممالک سے لڑاکا طیارے خریدنا ہوسکتے ہیںیاد رہے بھارت امریکہ سے ایف 16 طیارے خریدنے کا بھی سوچ رہا ہے اور فرانس سے بھی 36 رافیل کا معاہدہ کرچکا ہےاس کے علاوہ بھارت ملکی سطح پر بھی پانچویں جنریشن کے لڑاکا جہاز بنانے پر ابتدائی کام شروع کرچکا ہے جس کیلئے ایک خطیر رقم کی ضرورت ہےایسی صورتحال میں اگر بھارت روس سے پانچویں نسل کے لڑاکا جہاز خریدتا ہے تو اس کا اپنا پانچویں نسل کے لڑاکا طیاروں کا پروگرام متاثر ہوسکتا 

united Pakistan#

About fatima

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *